“د سولې په شاعرۍ کې د خپل غږ څرګندولو هيله”

هيله څېړنيز او پرمختيايي موسسه (انسټیوټ)
په شمالي او جنوبي وزيرستان کې شاعرانو ته د سولې، صبر، زغم، پرمختګ او عامو خلکو ته د سوکاله ژوند د
پيغامونو رسولو سپارښتنه کوي. غوره شوې شاعري به د يادې موسسې لخوا د انګريزي ژباړې سره په کتابي
.شکل کې چاپ کېږي
د هيلې موسسې هدف د کلتوري، هنري، او تخليقي هلو ځلو مالتړ کول دي , چې پدې شکل اولس ته د پرمختګ
.امن، سوکالۍ پيغام و رسوي او همدا شان په ټولنه کې د جنګ، تشدد او شخړو مخنيوی وکړي
هيله ټولنه د هرې ژبې، صنفونو او په ځانګړی توګه د محکوم ساتل شوو وګړو لکه ښځو او معلولينو (معزورو)
شوي خلکو ته بلنه ور کوي ، تر څو خپله شاعري له موږ سره شريکه کړي او خپل اواز ددې الرې نورو خلکو
.ته و رسوي
نوټ: هيله ټولنه یواځي د شمالي او جنوبي وزيرستان له شاعرانو هيله کوي چې خپله شاعري له موږ سره
.شريکه کړي، ټولو يادو خلکو نه هيله کېږي چې له موږ سره خپله شاعري زر تر زره شريکه کړي
ټولو ژمنو او د قدر وړ ملګرو نه هيله کېږي چې په الندينې برښنا ليک، ټويټر، فيسبوک، انسټګرام له الرې له
.موږ سره خپله شاعري شريکولی شي
Email: heela.pakistan@gmail.com

درخواست برائےاظہار دلچسپی

Read this post in English

ضلع شمالی اور جنوبی وزیرستان کے شعراء کیلئے امن اور اس سے جڑے موضوعات پر شاعری چھپوانے کا موقع

ھیلہ انسٹیٹیوٹ فار ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ نئے ضم شدہ قبائلی اضلاع شمالی اور جنوبی وزیرستان اور اس سے متصل ضلع بنوں اور ڈیرہ اسماعیل خان اورپاکستان بھر یا دنیا کے کسی حصے میں مقیم وزیرستان سے تعلق رکھنے والے شعراء کو دعوت دیتا ہے کہ وہ امید،امن اور رواداری، رجائیت پسندی ، سماجی ہم آہنگی، بقائے باہمی، عدم تشدد اور صنفی برابری کے موضوعات پر لکھی گئی اپنی شاعرانہ تخلیقات جمع کروائیں۔ان موضوعات پر شاعری کا انتخاب انگریزی ترجمہ کے ساتھ کتابی صورت میں شائع کیا جائے گا۔

ھیلہ انسٹیٹیوٹ نوجوان خواتین اور سماعت یا بینائی سے محروم یا کسی بھی جسمانی معذوری کے حامل شعراء کی خاص طور پر حوصلہ افزائی کرتا ہے اور ان سے امید کرتا ہے کہ وہ بھی اپنی شاعرانہ تخلیقات جمع کروائیں۔

ھیلہ انسٹیٹیوٹ فار ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ پاکستان ایک تحقیقی ادارہ ہے، جس کا دفتر اسلام آباد میں واقع ہے۔ ادارے کا بنیادی مقصد ثقافت کے ممکنہ کردا ر کو مستحکم کرنا ، آرٹس اور تخلیقی صلاحیتوں کو فروغ دینا ، سماجی تضاد، عدم برداشت اور تشدد جیسے موضوعات پر لچک پیدا کرکے پائیدار امن اور خوشحالی کیلئے راہ ہموار کرنا ہے تاکہ معاشرہ تنازعات اور جنگ و جدل سے محفوظ رہے۔

یاد رہے کہ آپ کی بھیجی گئی شاعری شمالی اور جنوبی وزیرستان میں سنہ 2000 کے بعد پیش آنے والے حالات اور واقعات ، وہاں کے لوگوں کی زندگیوں اور معاشرے پر اثرات کی عکاس ہو اور اوپر درج کیے گئے مخصوص موضوعات اور عنوانات پر مبنی ہو۔یہ شاعری کسی بھی زبان مثلاَ پشتو، اردو، انگریزی، ارمڑی یا برکی اور سرائیکی میں جمع کرائی جاسکتی ہے ۔

اپنی تخلیقات بھیجنے کیلئے درج ذیل ای میل ایڈرس کا استعمال کریں۔ اسکے علاوہ آپ ھیلہ انسٹی ٹیوٹ کے فیس بک، انسٹاگرام، واٹس ایپ اور ٹویٹر پر بھی بھیج سکتے ہیں۔

Call for Expression of interest in Peace Poetry

اس پوسٹ کو اردو میں پڑھیں

HEELA Institute for Research and Development، is currently looking for submissions in Peace poetry from poets from North and South Waziristan, on the theme of the hope, social harmony, tolerance, coexistence and peace. The selected poetry will be published in a book with English translation. HEELA aims to strengthen the potential role of culture, arts and creative industries to support the community’s resilience to violence, intolerance and conflict. We are open to all languages and women and people with disability are particularly encouraged to send their submissions.

Please also note that we only accept submissions from writers in based in North and South Waziristan or poets from these two districts settled anywhere If you’re interested, please send your poetry on heela.pakistan@gmail.com or send a message on Heela Facebook, Instagram or twitter.